147

مکتوب 5 : مخلص یاروں میں سے ایک مخلص یار خواجہ برہان الدین کی سفارش اور اس کے احوال کے بیان میں


مکتوب (5)

مخلص یاروں میں سے ایک مخلص یار خواجہ برہان الدین کی سفارش اور اس کے احوال کے بیان میں۔ یہ بھی اپنے پیر بزرگوار قدس سرہ کی خدمت میں لکھا ہے۔

حضور کا حقیر خادم عرض کرتا ہے کہ ایک رسالہ حضرت خواجگان نقشبند یہ قدس سرہم کی طریقت کے بیان میں لکھ کر ارسال خدمت کیا گیا ہے۔

امید ہے کہ حضور کی نظر مبارک میں آئے گا ابھی مسودہ ہی ہے چونکہ خواجہ برہان جلدی روانہ ہو گئے اس واسطے صحیح نقل کرنے کی فرصت نہ ملی ۔ خاکسار کا خیال ہے کہ اس رسالہ کے ساتھ اور علوم بھی ملائے جائیں۔ ایک دن رسالہ سلسلۃ الاحرار نظر سے گزرا۔ اسی وقت دل میں یہ خیال آیا کہ حضور سے عرض کروں کہ حضور اس رسالہ کے بعض علوم کے بارے میں کچھ لکھیں یا اس فقیر کو امر کریں تا کہ اس کے بارے میں کچھ تھ لکھے ۔ یہ ارادہ نہایت پختہ ہو گیا تھا کہ اسی اثناء میں اس مسودہ کے بعض علوم فائض ہوئے اور مجمل طور اس رسالہ یعنی سلسلہ الاحرار کے بعض علوم اس مسودہ کے ضمن میں بیان کیے گئے اگر اس مسودہ کو اس رسالہ کا تکملہ بنا لیں تو بھی ہو سکتا ہے اور اگر بعض مناسب علوم کو اس سے انتخاب کر کے اس رسالہ کے ساتھ ملا لیویں تو بھی مناسب ہے۔ زیادہ دلیری ادب سے دور ہے ۔ خواجہ برھان نے اس مدت میں اچھا کام کیا ہے اور تیسری سیر سے بھی جو مقام جذ بہ کے مناسب ہے حصہ پالیا ہے، خواجہ برھان کا دل صوبہ مالوہ کی بھاری مدد معاش کی وجہ سے پریشان رہتا تھا۔ اس واسطے حضور کی خدمت میں حاضر ہوتا ہے جس طرح فرمائیں گے اس کیلئے مبارک ہوگا۔

نوٹس : ویب سائیٹ میں لفظی اغلاط موجود ہیں، جن کی تصیح کا کام جاری ہے۔ انشاء اللہ جلد ان اغلاط کو دور کر دیا جائے گا۔ سیدنا مجدد الف ثانی علیہ رحمہ کے مکتوبات شریف کو بہتر طریقے سے پڑھنے کے لئے کتاب کا مطالعہ ضرور کریں۔ جزاک اللہ خیرا